سیّد علی گیلانی کی جدوجھد آزادی

Share on facebook
Facebook
Share on twitter
Twitter
Share on linkedin
LinkedIn
Share on whatsapp
WhatsApp

سیّد علی گیلانی کی جدوجھد آزادی کو خراج تحسین پیش کرنے کیلیے قرارداد منظور.

پاکستان سے دیرینہ محبت رکھنے والے، پاکستان کے ساتھ کشمیر کا الحاق چاھنے والے مقبوضہ کشمیر کے عظیم راہنما سید ‏علی گیلانی کو #نشان_پاکستان_سے_نوازنے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی گئی۔

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں جماعت اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد نے آزادی کشمیر کیلیے سید علی گیلانی کی قربانیوں کو سراہنے کی قرادر پیش کی جو ایوان نے متفقہ طور پر منظور کر لی۔

قرارداد کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بزدل بھارت کی جانب سے 90 سالہ سیّد علی گیلانی کی بلا جواز مسلسل نظربندی پر خدشات کا اظہار کرتے ہیں، وزیراعظم ہاؤس کےقریب بنی یونیورسٹی کو سیّد علی گیلانی سے موسوم کیا جائے۔

قرارداد میں مطالبہ کیا گیا کہ سید علی گیلانی کو طویل خدمات اور قربانیوں پر نشانِ پاکستان سے نواز جائے اور سید علی گیلانی کی جدوجہد کو قومی و صوبائی تعلیمی نصاب میں شامل کیا جائے۔

یاد رھے سید علی گیلانی وہ پہلے کشمیری راہنما ھیں جو مقبوضہ کشمیر کا پاکستان سے الحاق کروانے کے مطالبے پر جدوجھد کر رہے ھیں۔ سید علی گیلانی کی حرّیت کانفرس کے کارکنان آج بھی جو شھادت پاتے ھیں پاکستانی پرچم میں لپٹ کر سفرِ آخرت پر روانہ ھوتے ھیں۔